...

سورة الشعراء PDF

Additional Details

Surah NameSurah Ash-Shu’ara
No. Of Surah:#26
Meaning:THE POETS
Revealed:Makkah
Total Rukus:11
Total Verses:227
PDF Size:3.3MB
Category:Religion (Holy Quran)
Last Update:Recently
Uploaded By:pdfmug.com

سورة الشعراء کا تعارف:
“سُوْرَۃُ الشُّعَرَاء” قرآن مجید کی بیستھویں سورہ ہے اور اس کا رقم 26 ہے۔ یہ سورہ مدنی سورہ ہے، یعنی اس کی نازل ہونے کا وقت مدینہ منورہ تھا۔ سورہ الشعراء مخصوص طور پر مخالفین کے خلاف نبی محمد ﷺ کی نبوت اور رسالت کی تصدیق اور ان کے بدلنے کی دھمکی دیتی ہے۔ اس سورہ میں انبیاء کے قصے بیان کئے گئے ہیں، جو لوگوں کے ساتھ روایت ہوئے تھے اور ان سے انسانوں کے اخلاقی اور اخلاقی مسائل کا حل سکھایا گیا ہے۔

سورة الشعراء کی اہمیت:

  1. نبی محمد ﷺ کی نبوت کی تصدیق: اس سورہ میں قدیم انبیاء کے قصے اور نبی محمد ﷺ کی نبوت کے ثبوت کی دستاویزی اقوال پیش کئے گئے ہیں جو ان کے مخالفین کے لئے ایک عظیم عبرت ہیں۔
  2. انسانی اخلاق کا بیان: سورہ الشعراء میں انسانی اخلاق کے اہم مسائل پر روشنی ڈالی گئی ہے۔ انبیاء کے قصے اور ان کے مقامات سے ہمیں انسانی رفتار کو بہتر بنانے کا راستہ بتایا گیا ہے۔
  3. توحید اور ایمان کی ترقی: سورہ الشعراء میں اللہ کی توحید کی اہمیت اور ایمان کی بلندیوں پر بہترین مثالیں پیش کی گئی ہیں۔
  4. دعوتِ اسلام کی تشدد: یہ سورہ مشرکین کے دلوں میں اسلام کی دعوت کے لئے جذبہ اور تشدد کی آگ بھڑکاتی ہے اور انہیں خدا کے رسول ﷺ کی نصیحت کا انکار کرنے کے نتیجے میں ان کے ساتھ زیادتی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔
  5. رحمت و مہربانی کا پیغام: اس سورہ میں اللہ کی رحمت اور مہربانی کا ذکر ہے جو انسانیت کے لئے امیدواری کا پیغام ہے۔

سورة الشعراء کی خصوصیات:

  • اس سورہ میں بیشتر انبیاء کے قصے بیان کئے گئے ہیں جن میں حضرت نوح، حضرت ابراہیم، حضرت موسیٰ، حضرت لوط، حضرت شعیب، حضرت ایوب، حضرت ہارون، حضرت ہود، حضرت صالح اور حضرت محمد ﷺ شامل ہیں۔
  • اس سورہ میں انسانی اخلاق، ایمان، توحید، وحدت، نیکی، اصلاحِ معاشرت، ظلم، شرک، تکبر اور مختلف اقوام کی نصیحت سے متعلق اہم باتیں ہیں۔
  • اس سورہ میں مختلف اعجاز، نشانیاں اور معجزات بیان کئے گئے ہیں جو انبیاء کے دور میں نازل ہوئے تھے۔
  • یہ سورہ مخالفین کے لئے ایک انذاری سورہ ہے جو ان کو مشرکیت سے باز آنے اور ایمان کی سبق آموزی کے لئے ترغیب دیتا ہے۔

سورة الشعراء کی تفصیلات:

  • سورہ الشعراء کی تعداد 227 آیات ہے جو ۴ رکوعات میں مشتمل ہے۔
  • یہ سورہ قرآن پاک کے سب سے معروف سورہ میں سے ایک ہے اور اس کا وسطی پانکتی ہے۔
  • اس سورہ کی نازل ہونے کا وقت مدینہ منورہ کیلئے مخصوص ہے اور اس کا نزول ہجرت کے چھٹے سال میں ہوا۔

سورۃ الشعراء کے حوالے سے پانچ سوالات اور جوابات:

  1. سورۃ الشعراء کی تعداد کتنی آیات پر مشتمل ہے؟
    جواب: سورۃ الشعراء 227 آیات پر مشتمل ہے۔
  2. سورۃ الشعراء کا نزول کہاں ہوا؟
    جواب: سورۃ الشعراء کا نزول مدینہ منورہ میں ہوا۔
  3. سورۃ الشعراء میں کون کون سے انبیاء کے قصے بیان کئے گئے ہیں؟
    جواب: سورۃ الشعراء میں حضرت نوح، حضرت ابراہیم، حضرت موسیٰ، حضرت لوط، حضرت شعیب، حضرت ایوب، حضرت ہارون، حضرت ہود، حضرت صالح اور حضرت محمد ﷺ کے قصے بیان کئے گئے ہیں۔
  4. سورۃ الشعراء کی نازل ہونے کا وقت کیا تھا؟
    جواب: سورۃ الشعراء کی نازل ہونے کا وقت ہجرت کے چھٹے سال میں تھا۔
  5. سورۃ الشعراء کا کونسا رقم ہے؟
    جواب: سورۃ الشعراء قرآن مجید کی بیستھویں سورہ ہے اور اس کا رقم 26 ہے۔

Leave a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Scroll to Top
Seraphinite AcceleratorOptimized by Seraphinite Accelerator
Turns on site high speed to be attractive for people and search engines.